Khwab 4 line shayari in urdu

خواب کی طرح بکھر جانے کو جی چاھتا ھے

ایسی تنھائ کی مر جانے کو جی چاھتا ھے

گھر کی وحشت سے لرز تا ھوں مگر جانے کیوں

شام ھوتی ھے تو گھر جانے کو جی چاھتا ھے